او ی شیف مین کوروناوائرس کی کامیاب کہا نی

او ی شیف مین کوروناوائرس کی کامیاب کہا نی

او ی شیف مین کوروناوائرس کی کامیاب کہا نی
او ی شیف مین کوروناوائرس کی کامیاب کہا نی

ایوی شفمان واشنگٹن کے ایک ہائی اسکول میں پڑھتے ہیں۔ ان کی تیارکردہ ویب سائٹ ncov2019.live پر کورونا وائرس کیہر بدلتی ہوئی صورتِ حال کو بآسانی دیکھا جاسکتا ہے۔ اس کیساتھ ساتھ ڈاکٹروں کے مشورے اور کورونا وائرس سے بچاؤکے طریقے بھی شامل ہیں۔

او ی شیف مین کوروناوائرس کی کامیاب کہا نی

ایوی اس منصوبے پردن رات کام کرتے ہیں۔ یہاں تک کہ چھٹی کیروز بھی اس پر ڈٹ کر کام کرتے ہیں اور کبھی انہیں ویب سائٹ اپ ڈیٹ کرتے ہوئے ساری رات لگ جاتی ہیہیں لیکن ان کی محنت کا پھل لاکھوں افراد کی زندگی بچانے میں کام آیا ہے جس کے بعد وہ دنیا بھر میں مشہور ہوچکے ہیں۔

                                                                                                                                                                 https://ncov2019.live/about

مرسر ہائی اسکول کے اس سٹوڈنٹ نے دسمبر 2019ء میں ہی یہ ویب سائٹمنظڑ عام پر لے آیا تھا جس میں ہر 10 منٹ کے بعد متاثرہ افراد کا ڈیٹا مل سکتا ہے۔ ساتھ ہی عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی ویب سائٹ اور سی ڈی سی امریکا سے بھی ہدایات اور معلومات کا ذخیرہ شامل ہیں۔
ایوی کا کہنا تھا کہ ’میں ایک ایسی ویب سائٹ تخلیق کرنا چاہتا تھا جس میں کورونا سے متعلق ہرقسم کی معلومات موجود ہوں، ساتھ ہی درست ڈیٹا بھی دکھانا چاہتا تھا تاکہ غلط اطلاعات اوخبریں نہ پھیل سکے اس طرح ایک ہی ویب سائٹ کوروناوائرس سے متعلق معلومات موجوہوں۔
ایوی روزانہ اپنی ویب سائٹ پر چھ گھنٹے کام کرتے ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کورونا وائرسسے بیمار ہونے والے نوجوان افراد کی 80 فیصد تعداد کسی اہم علاج نہ ہونے کے باوجود بھی بہتر ہوجاتی ہے مگر عمررسیدہ اور پہلے سے ہی بیمار افراداس سے مشکل ہی بچ سکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں