بریسٹ کینسر

بریسٹ کینسر

کہتے ہیں کہ تندرستی ہزار نعمت ہے ہمارے جسم کا کوئی بھی اعضاء کسی بھی تکلیف ہو توساری خوشیاں ماند پڑ جاتی ہے۔وقت بدل رہا ہے اور اس بدلتے وقت کے ساتھ ساتھ نئی نئی بیماریاں جنم لے رہی ہیں۔ خواتین کی بہت سی ایسی بیماریاں ہیں جو کہ بعض اوقات موت کا سبب بھی بن جاتی ہے مگر شاید اچھا دیکھتے ہیں، خودٹھیک ہو جائے گا یا ہاں یار ڈاکٹر کے پاس جاناہے مگر ٹائم نہیں جیسے فقر ے بُرا ٹائم آنے پر ٹائم نہیں دیتے اور انسان ابدی نیند سو جاتا ہے۔آج کل خواتین میں ایک بہت ہی نمایاں بیماری عام ہے جس کو عام الفاظ میں چھاتی کا سرطان یعنی بریسٹ کینسر بھی کہاجا تا ہے۔پاکستان میں اس بیماری کا علاج ہے اور خواتین شفا بھی پا رہی مگر امریکہ اس بیماری کے علاج میں کس قدر ا ٓگے نکل گیا ہے آیئے جانتے ہیں کہ یہ کس دریافت کا زکر ہے۔
بریسٹ کینسر کی شاخت ایک مشکل عمل ہے مگر امریکہ ایک بار پھر بازی لے گیا۔ یوینورسٹی آف بفیلو کے چند ماہر ین نے ایک چھوٹا اور تیز رفتار آلہ ڈیوئل اسکین میمواسکوپ کے نام سے متعارف کروایاہے۔ یہ آلہ ٹھوس بافتوں (ٹشوز) کے گہرائی تک جا کر اس کی تصویر کشی کرتا ہے۔ سائنس دانوں نے اس کا عمل روزیل پارک کینسر سنیٹراور ونڈ سونگنت تعاون سے ممکن بنایا۔ دان جن ژیا نامی سائنس دان نے بتایا کہ اس کا عمل روشی اور الٹراساونڈ کا مکسچر ہے اور اس کی مدد سے زندگیاں بچانے کے زیادہ چانسز ہیں۔
میمو گرام بریسٹ کینسر کے مرض کے لئے بہترین آلہ سمجھا جاتا ہے مگر بعض خواتین کے عضلات سخت ہوتے ہیں جس کہ وجہ سے میمو گرام گہرائی میں جاکر اچھی طر ح مرض کی تشخیص نہیں کر پاتااور سرطانی پھوڑا نظر سے اوجھل رہتا ہے جس سے بیماری کے بڑھنے کا چانس زیادہ ہوتا ہے۔دوسرا طریقہ ایم آئی آر ہے جس میں موجود خاص قسم کا کیمیکل سرطانی پھوڑا کا رنگ تو دیکھاتاہے مگر یہ کئی مریضوں میں تکلیف اور الرجی کا باعث بن کے مریض کو اور تکلیف دیتا ہے۔

بریسٹ کینسر

یہ نئی ایجاد میموگرام کی طر ح ہی کام کرتا ہے لیکن اس میں چھاتی کو زیارہ طاقت سے نہیں دبایاجاتا۔ یہ ٹیسٹ ہر طر ح کیا اشعاع سے پاک ہے اس میں موجود صوتی لہریں اور روشنی ایک خاص قسم کی تصویر بناتی ہے جو کہ علاج میں کافی مددگار ثابت ہوتا ہے۔میڈیکل سائنس کی زبان میں اسے فوٹو اکوسٹک ٹومو گرافی کہا جا تا ہے۔
اس عمل کی وجہ سے زخم کی تصویر زیادہ نمایا ں ہوتی ہے اور علاج میں آسانی آتی ہے۔یہ سات میٹر تک تصویر زیادہ نمایاں دیکھاتا ہے یہ اتنی صاف تصویر دیکھاتا ہے کہ خون کی نالیاں بھی اس سے نہیں چھپ سکتی جو کہ علاج کر نے میں آپ کو آسانی دیتی ہیں۔ہم اُمید کر سکتے ہیں کہ مستقبل قریب میں یہ آلہ پاکستان میں موجود ہو گااور پاکستان کی خواتین کے علاج میں آسانی ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

بریسٹ کینسر” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں