جگر کی بیماری اور علاج

جگر کی بیماری اور علاج

جگر کی وجہ سے پیدا ہونے والے امراض کا اگر بغور مطالعہ کیا جائے توپتہ چلتا ہے کہ بعض لوگوں کے جگر پیدائشی طور پر کمزور ہوتے ہیں، ان لوگوں کی جلد نرم، سفیدی رنگ کی ہوتی ہے،یہ لوگ کام کر نے میں بہت سُست ہوتے ہیں۔ ان لوگوں کو قبض اور ریح جیسی بیماریوں کی شکایت زیادہ اور اکثر رہتی ہے کبھی یہ کیفیت پیدائشی نہیں بلکہ بعض وجوہات سے ہوتی ہے مثلاََ زیادہ تیل والی غذاء کا استعمال، زیادہ پریشانی کے سبب بھی جگرکمزور ہو جاتا ہے، ان کا پیٹ بڑھا ہوتا ہے۔ اکثر شوگر کی وجہ سے بھی لوگوں کا جگر کمزور ہو جاتا ہے۔

جگر کی بیماری اور علاج

اب جگر کے لئے مفید اور مضر اغذیہ اور ادویہ پرنگاہ ڈالی جائے تو تیل میں بنے والی غذائیں جگر میں چربی پیدا کرنے کے علاوہ اس کی حرارت کو بجھاتی ہیں اور انڈے کا بہ کثرت استعمال جگر پر چربی چڑھاتاہے۔ چینی کا استعمال ترشی پیدا کرتا ہے جبکہ دہی کا زیادہ استعمال جگر، معدہ اور جسم میں ٹھنڈک لاحق کردیتا ہے۔وٹامنزکا بے جا استعمال لوگوں کو قبض اور معدے میں خراش کے مسئلہ کا شکار کردیتی ہے۔ کافی اور چائے کا بکثرت استعمال معدے پر بُرے اثرات مرتب کرنے کے علاوہ جگر کوگرم کردیتا ہے۔
سفید رنگ کی غذاؤں کے استعمال سے بلغم زیادہ پیدا ہوتی ہے۔ نیز سرخ رنگ کی غذاؤں مثلاََ سٹرابیری، سرخ انگور، چقندر، آڑو،انار، ٹماٹر پکے ہوئے اور سبز رنگ کی غذائیں جسم اور جگر دونوں کے لیے مفید ہیں۔
جگرکے لئے بہترین غذائیں: جو کا دلیہ، کھجور، لہسن،سبز چائے، چقندر، انجیر،میوہ جات، مچھلی، زیتون کا پھل، سیب، آلوبخارا، پکی ہوئی غذاؤں میں پرندوں کے گوشت کی یخنی، بکرے کے گوشت کی یخنی، مونگ مسور کی دال،کالے چنے کا پانی، کدو یہ وہ غذائیں ہیں جو جگر کو طاقت دیتی ہیں تاکہ جگر بہتر طریقے سے کام کر سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

جگر کی بیماری اور علاج” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں