حکومت کو احساس پروگرام کا احساس ہوہی گیا

حکومت کو احساس پروگرام کا احساس ہوہی گیا

حکومت آج سے احساس پروگرام کا آغازکر گئی اور مستحق خاندانوں میں امدادی رقم دی جائیگی۔
احساس پروگرام کے ذریعے مستحقین کے لیے مختلف سرکاری اسکولز میں سینٹرزبن گئے ہیں جو صبح 8 بجے سے شام 5 بجے تک کھلے رہیں گے، امدادی رقوم کو تقسیم کرنے کے لئے محکمہ تعلیم سمیت بینک کا عملہ بھی ساتھ دیں گا، ہر مستحق خاندان کو بائیومیٹرک تصدیق کے بعدبارہ ہزار روپے کی امدادی رقم دی جائے گی، مستحقین خواتین کی سہولت کے لیے ان کے گھروں کے پاس ہی سینٹر زبنائے گئے ہیں۔

حکومت کو احساس پروگرام کا احساس ہوہی گیا

حکومت کی طرف سے بنائے گئے مراکز اور نجی بینک کے اے ٹی ایمز کے ذریعے رقم کا حصول ممکن ہوسکے گا۔ امدادحاصل کرنے والوں کے اب تک 4 کروڑ چالیس لاکھ ایس ایم ایس پیغامات موصول ہوچکے ہیں۔
ملک بھر میں 17 ہزار مقامات سے رقوم کا حصول ممکن ہوسکے گا، پہلے مرحلہ میں تیس لاکھ خاندانوں کو امداد دی جائے گی، اگلے دو ہفتے تک 144 ارب روپے تقسیم کئے جائیں گے، اس کے مطابق ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں کو اس پروگرام کے تحت پیسے امداد کی مد میں دئیے جائے گے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: احساس پروگرام کی ایک نئی شکل

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ احساس پروگرام میں کسی قسم کی سیاسی مداخلت نہیں ہے اور نہ میں برداشت کروں گا، احساس پروگرام کے تحت ہر خاندان میں سے ایک فرد کو یہ امداد ملے گی، ٹائیگر فورس ضلع، تحصیل اور یونین کونسل کی سطح پر کام کرے گی،وہ غریبوں کی مشکلات کے ازالہ میں تعاون فراہم کرے گئی۔
ٹائیگر فورس احساس پروگرام کے تحت غریبوں کی 8171 پر ایس ایم ایس کے بعد رجسٹریشن کرے گی، یہ فورس کسی بھی علاقہ کے لاک ڈاؤن کی صورت میں وہاں لوگوں روز مرہ اور کھانے پینے کی چیزیں فراہم کرئے گئی۔
معاون خصوصی سماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے بتایا رقم کی ترسیل بائیو میٹرک تصدیق کے بعد ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

حکومت کو احساس پروگرام کا احساس ہوہی گیا” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں