دانتوں کے مسائل

دانتوں کے مسائل

پانی قدرت کا انمول تحفہ ہے۔ کہا جا تا ہے کہ انسان کھانے کے بغیر تو رہ سکتاہے مگر پانی کے بغیر جینے کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا۔ پانی جہاں چہرے کی رنگت کو صاف کرتا ہے ساتھ ہی ساتھ آپ کے چہر ے کی خوبصورتی کو چار چاند لگانے والے دانتوں کی حفاظت بھی کرتا ہے۔ کہتے ہیں کہ موت کادرد اور دانت کی درد کبھی بھی او ر کہیں بھی شروع ہوسکتی ہے جو انسان کی زندگی کو بے مزہ کر دیتی ہے نہ آپ کچھ کھا سکتے ہیں نہ پی سکتے ہیں بس یہ ہی کہہ سکتے ہیں کہ یہ بہت مزے کا ہے مگر مصبیت میں کھا نہیں سکتا۔ گرم پانی جہاں دل کی بہت سی بیماریوں سے بچاتا ہے، آپ کا وزن کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے وہاں آپ کےدانتو ں کو نئی زندگی دینے میں بھی بہت اہم کردارادا کر تاہے۔

دانتوں کے مسائل

گرم پانی اور نمک کے غرارے
ایک ریسرچ کے مطابق گرم پانی اور نمک کے غرارے کر نے مسوڑں کی سوجن سے چھٹکارہ ملتا ہے اور تکلیف کم ہونے لگتی ہے۔نمک ایک قدرتی تحفہ ہے اس لئے اس میں بہت سے قدرتی اجزا پائے جاتے ہیں مثلااس میں انیٹی بیکٹیر یل اور انٹیی فنگل موجو د ہوتا ہے جومنہ میں موجود یا پیدا ہونے والے بیکٹیریا سے مقابلہ کر تا ہے اوردراصل یہ بیکٹریا سوجن کا سبب بنتے ہیں۔یہ عمل دن میں کم از کم دو بار کریں ایک دفعہ دن میں اور ایک دفعہ رات میں۔
ایلوویرا
ایلووایرا بھی ایک بہت موثر علاج ہے اس کا جیل آپ کے دانتوں کے لئے آب شفا کی اہمیت رکھتا ہے۔ لوگ مارکیٹ سے بہت مہنگے ماوتھ واش لیتے ہیں لیکن دو چمچے ایلوویرا کے جل کو پانی میں ملا کے اس کو بطور ماوتھ واش استعمال کریں تو یہ آپ کی تکلیف میں کافی کمی آئے گی۔
ہلدی کا جل
ہلدی صر ف کھانے کا ذائقہ ہی نہیں بدلتی تھی بلکہ دانتوں میں پلاک لگنے سے بھی روکتی ہے۔اس میں موجود کرکیومائن نامی مر کب موجود ہوتا ہے جو ضدی تکسد اور سوزشی جیسی خصویات کا مجموعہ ہے۔ برش کر نے بعد اگر ہلدی کا جل دس منٹ کے لئے لگایا جائے تو آپ کے دانت اور مسوڑیں آپ کی مسکراہٹ کو چار لگا دیں گا۔
پھٹکری سے علاج
ایک کپ گرم پانی میں تین چھوٹے چھوٹے ٹکریں اور دو چٹکی نمک ڈال کر غررے کریں تو آپ کو کافی سکون ملے گا یہ عمل دن میں کم ازکم دوبار دوہرائے خاص طور پررات کے وقت یہ عمل بہت فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں