نصرت سہیل

نصرت سہیل

کہتے ہیں کہ اللہ کی نصرت ان ہی کو نصیب ہوتی ہے جو اپنی قسمت آپ بدلنا چاہتے ہیں انسا ن کہیں بھی ہو کس حال میں بھی ہودیس اپنا ہو یا پردیس ہو ہمت والے ہر حال میں میدان مار لیتے ہیں اور جب بات پاکستانی خواتین کی ہو تو پھر مقابلہ اور بھی سخت ہو تا ہے۔ پاکستانی خواتین نے ہمیشہ پاکستان کا نام روشن کر نے میں ڈٹ کے مقابلہ کیا ہے۔پردیس میں رہنا اور اپنے پاکستانی ہونے کا ثبوت دینا یہ کوئی چھوٹی بات نہیں ملالہ، ارفع، طاہرہ قاضی یہ پاکستا ن کی خواتین میں وہ جذبہ پیدا کر کے گئی ہیں جو رہتی دنیا تک پاکستانی خواتین میں زندہ رہے گا۔

نصرت سہیل

نصرت سہیل کا شمار ان خواتین میں ہوتا ہے جنہوں نے اللہ کی نصر ت سمٹنے میں کوئی شک کی گنجائش نہیں چھوڑی کراچی سے لے کر نیو جرسی تک کا سفر آسان نہیں تھا مگر پاکستان کی اس ہنر مند خاتون نے امریکہ میں اپنی ایک الگ شناخت بنائی۔نئے نئے آییڈیاز اور ہر وقت کچھ نیا کر نے کی جستجو کی وجہ سے اللہ نے ان کو بہت ساری کامیابیوں سے نوازا ہے۔نصرت نے شبعے تعلیم میں اپنا ایک منفرد مقام بنا یا ہے گذشتہ بیس سال سے سکالرز اینڈ لیڈرز اکیڈمی ینوجرسی اور ال نو ر اکیڈمی امریکہ میں بطور اسٹنٹ پرنسپل کام کررہی ہیں اس کے ساتھ ساتھ اپنی قومی زبا ن سے محبت کا حق کا ادا کرتے ہوئے سٹار ٹاک ہندی۔اردو لینگوئج سمر ویسٹ ونڈسرپلانیسبوروسکول ینو جرسی پروگرام کی بطورڈائر یکٹربھی اپنے فرائض دے رہی ہیں ان کی بہت ساری سٹوڈنٹس اس پروگرا م کے تحت اپنا اور پا کستان کا نا م روشن کر رہی ہیں۔ نصرت سہیل کا شماران خواتین میں ہوتا ہے جوپردیس میں رہتے ہوئے بھی پاکستان کے اصولوں کو یاد رکھیں ہوئے ہیں ان کا تعلیمی میدان میں تجربہ بھی (نیوجرسی پبلک سکول اور کراچی کے مختلف سکولز) ان کی ایک الگ شناخت ہے۔ اتنی کامیابیاں سمٹنے کے بعد بھی ان کا تعلیمی میدا ن میں کامیا بیوں کا سفر ختم نہیں ہوتا وہ گذشتہ چھ سال سے گرایجویٹ سکول آف ایجوکیشن روٹگریوینورسٹی میں ٹیچرز اورسٹوڈنٹس کو سپروائز کر تی ہیں اس کے ساتھ ساتھ وہ سٹار ٹاک ہندی۔اردو لینگوئج ٹیچر ٹرئینگ این وائے یو کی سپروائزر ہیں۔ نصر ت کی شخصیت میں یقین اور کر دکھانے کے جذبے کی وجہ سے وہ سٹار ٹاک ہندی۔اردوپروگرام کین یونیورسٹی کی کوڈنیٹر اور سپروائزر بھی ہیں۔ ان کی کامیابیوں کو دیکھتے ہوئے نیوجرسی کی ایک فاونڈیشن(فاونڈیشن آف ایجوکیشنل لیڈرشپ) ان کے پروجیکٹس کو سپونسر ز بھی دیتی ہے۔ کچھ سکھنے اور مسلسل جدوجہدکی وجہ سے انہوں نے کولمبیا یونیورسٹی سے ٹیچرز کالج کے سمینارز بھی باقاعدگی سے اٹنڈ کر تی ہیں تاکہ امریکہ میں مقیم پاکستانیوں کو کچھ نیا سکھا سکیں۔ان کا سفر نیوجرسی امریکہ تک محدودنہیں بلکہ پاکستان کے خوبصورت علاقہ سوات میں آل پاکستان ماڈل گر لز ایس آر آئی ماڈل سکول کی پروجیکٹ ہیڈبھی ہیں۔ یہ پروجیکٹ سوات کی رائل فیملی سے تعلق رکھنے والی زیبو جیلانی نے دو کمروں سے شروع کیا تھا جو اب ایک تناور درخت بن چکاہے جس کا خاص مقصد بچیوں کو تعلیم سے روشناس کروانا ہے۔ یہ وہی سوات جہاں کبھی بچیوں کو بارہ سال کی عمر میں بیاہ دیا جاتا تھا، جہاں ملالہ یوسف زئی جیسی ہنر مندلڑکیوں کو گولیوں کا نشانہ بنایا جاتا تھا مگر وہاں اب تعلیم ہے۔

وجود زن سے ہے تصویر کا ئنات میں رنگ کی ایک اعلیٰ مثال کا سہرا بھی نصرت سہیل کے سر ہی جا تا ہے جس کی بہترین مثال ویمن ٹو ویمن فورم ہے جس کا بنیادی مقصد امریکہ میں مقیم پاکستانی خواتین کو ایک سوشل پلیٹ فارم دینا تاکہ وہ ایک دوسر ے کے ساتھ مل کر اچھا وقت گذارسکیں اور مل کے پاکستان کا پوزیٹیو امیج سامنے لا سکیں۔عورتوں کے جائز حقوق کی بحالی کے لئیاور ڈیجٹل خواندگی اور شہریت کے لئے آریٹکل بھی لکھ ڈالاجس کا نام (عالمی سطح پر خواندگی)جس میں پاکستانی خواتین کے شرح خواندلگی کے بارے میں بتایا گیا ہے۔ ہم بچپن سے سنتے آرہے کہ قسمت بھی ان کا ساتھ دیتی ہیں جو جتنا چاہتے ہیں اور نصر ت کا شمار بھی انہی لوگوں میں ہوتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں