نیوز کاسٹر راحیلہ فردوس

نیوز کاسٹر راحیلہ فردوس

کہتے ہیں کہ اچھی خبر کا ہونا کسی بھی قوم کے لئے مثبت ہوتا ہے اور عموما لوگ اچھی خبر کو دیکھنا اور سننا پسند کرتے ہیں۔ لیکن نیوز کے شعبے سے وابسطہ نیوز ریڈرز کے لئے یہ خبر دنیا کی ایک بہت ذمہ داری ہوتی ہے اور اسے چاہیے کہ کہ اس دن کے ہونے والے واقعات میں سے کوئی بری خبر بھی پڑھنے کو ملے اور دیکھنے والوں تک بہتر طریقے سے پہنچائے۔خبر کے پیش کر نے کے لئے آواز کااُتار چڑھاو، لب ولہجہ،تلفظ اور خبر پڑھنے والے کی شخصیت اور کسی اچھے نیوز انیکر کا معیار ہوتا ہے۔
نیوز انیکر کا حالات حاضرہ سے باخبر رہنا بھی اس کے کام کو چار چاند لگا دیتا ہے۔یوں تو آج کے دور میں ٹی وی چینلز کی بھر ما ر ہے اور بہت سے نیوز انیکر مختلف چینلز پر خبریں پڑھتے نظر آتے ہیں اور اس دور میں میڈیا پر نظر آنا شاید آسمان پر نظر آنا ہے۔لیکن جب صرف ایک چینل پی ٹی وی پر نیوز انیکر کا چُناو ہوتا تھا تو پھر یہ ایک خواب جیسا لگتا تھا۔پی ٹی وی کے معیار پر پورا اُترنا اور وہاں کی نیوزکے لئے سلیکشن اورپھر رات نوبجے پاکستان کے سب سے بڑے واحد چینل پر خبریں پڑھنا یہ چناو آج کے تمام ٹی

نیوز کاسٹر راحیلہ فردوس
                                     نیوز کاسٹر راحیلہ فردوس

وی چینلز کے معیا ر سے ہر طر ح مختلف تھا کیونکہ آواز، اعتماد، شخصیت،لائیو ٹی وی پر آنا اور پھر ایک سخت تر ین ٹرنینگ کے بعد پہلے مقامی خبریں پڑھنا اور پھر خبر نامہ پڑھنا اور پھر تمام دوسرے بڑے اسٹیشز کے نیوز کاسٹرز کے ساتھ کراچی سنٹر کی نمائند گی کر نا یہ بہت بڑی کامیابی ہے۔ لیکن اس کے پیچھے محنت لگن اور کسی حد تک قسمت اور زیادہ اللہ تعالی کی مرضٰی کا دخل ہوتا ہے۔ اور یہاں تو قسمت اور محنت دونوں نے ہی کامیاب اور آوٹ اسٹیڈنگ کیٹگر ی کی نیوز کاسٹر راحیلہ فردوس کا ساتھ دیا۔

نیوز کاسٹر راحیلہ فردوس

کالج کے تقریری مقابلوں، ریڈیوکے بزم ظلبہ اوردوسری سرگر میوں میں حصہ لینے والی ایک طلبہ پی ٹی وی کے پروگرا م درخشاں بطور مہمان پہنچی تو اسے یہ ایک موقع ملا کہ ٹی وی تک رسائی ہوگئی اور پھر راستہ مل گیا۔وہاں کے نیوز ڈیپارٹمنٹ میں بغیر سفارش درخواست دیتے ہوئے اس نے سوچا بھی نہیں تھا کہ وہ ایک دن اس شعبے کی سب سے کامیاب نیوز اینکر بن جائے گی، صرف کراچی ہی نہیں بلکہ پاکستان بھرمیں اسے جانا اور مانا جائے گا اور لاتعداد ایواڈز سے نوازا جائے گا۔
راحیلہ فردوس ایک مشہور میڈیا شخصیت ہیں۔ بحیثیت نیوز انیکر انہیں پی ٹی وی کی بہتر نیوزانیکر ہونے کا اعزاز حاصل ہے۔ اس حوالے سے انہیں بہت سے ایواڈز سے نوازا گیا۔پندرہ سال سے ملکی اور بین الاقوامی خبریں پڑھنے والی نیوز انیکر راحیلہ ٖفردوس نے اپنے غیر معمولی انداز سے نیشنل نیٹ ورک پر اپنی نمایاں جگہ بنائی۔ اور پاکستان ٹیلی ویثر ن نیٹ ورک کراچی سنٹر پر دس سال سے کسی بھی خاتون نیوز انیکر کے خلاکو پُر کیا۔اُنہوں نے اپنی محنت اور سیکھنے کے ہنر کوکامیابی کا راستہ بنایا۔ ان کا کہنا ہے کہ سیکھنے کا عمل ہمیشہ جاری رکھنا چاہیے اور خبر تو ویسے بھی ہر نئے دن کے ساتھ نئی آتی ہیں تو سیکھنے کا عمل تو جاری رہتا ہے۔

عام طور پر لوگ خبر کو صرف ایک آنے والے دن کی تبدیلی کا واقعہ سمجھتے ہیں۔
ان کا کہنا ہے کہ میں نے دراصل نیوز اینکر بننے کے بعد ہی اس تبدیلی اور واقعے کی اہمیت اور شدت کو سمجھا اور اس سے معاشرے پر ہونے والے اثرات کو محسوس کیا۔خبریں جب تک سمجھیں نہیں اور ان خبروں سے معاشرے کے لوگوں تک رابطہ نہ بنیں تو یہ خبریں دینے کا عمل بیکار ہو سکتا ہے۔ایک اچھا نیوز انیکر ترجمانی کرتا ہے اردگرد ہونے حالات اور واقعات کی جوکہ ایک بہت بڑی ذمہ داری ہے۔
بیس سال پاکستان سے امریکہ منتقل ہونے سے پہلے راحیلہ فردوس پاکستان ٹیلی ویثرن پر پرائم ٹائم میں رات نو بجے اہم ترین نیوز پڑھیں۔کبھی کبھی کراچی کت بہت حالات میں ٖصرف اُنہوں نے ہی حامی
بھری۔
اُنہوں نے ریڈیو پاکستان، مختلف ٹی وی چینلز، حکومتی سطح پر ہونے والے پروگراموں اور بہت سی پاکستانی تنظیموں کے ساتھ کا م کیا ہے۔پچھلے چار سے نیویارک آج ٹی وی یوایس اے کے ساتھ منسلک ہیں۔
اور مقبول ترین پروگرام بات سے بات راحیلہ کے ساتھ کی میزبان اور پروڈیوسر بھی ہیں۔اُنہوں نے اس شو سے امریکہ میں بسنے والے باصلاحیت اور ہنر مند مسلمانوں کی نہ صرف حوصلہ افزائی کی بلکہ مختلف
پلیٹ فارم پر متعارف بھی کروایا۔ پاکستانی کمیونٹی کا ان باصلاحیت کوگوں کے تجربات اور کامیابیوں سے بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملتا ہے۔
راحیلہ ایک قابل فخر پاکستانی امریکن ہیں جو اپنی کمیونٹی کو ان خدمات کے ذریعے اپنے وطن سے، اپنی ثقافت سے قریب رکھنا چاہتی ہیں۔انہیں یوم پاکستان کے حوالے مختلف پروگراموں کی میزبانی کا شرف بھی حاصل ہے اور یہ نیویارک، ورجینا، میری لینڈ، نیو جرسی میں پاکستان کی محبت کی گن گاتی ہیں۔اس حوالے سے بچوں کو ٹبیلو وغیرہ تیار کرواتی ہیاس کے ساتھ ساتھ پاکستانی قونصل میں ہونے والی محفل میلاد بھی سجاتی ہیں۔

راحیلہ کوان کی صلاحیتوں اور خدمات پر بہت سے ایواڈزسے نوازا بھی مل چکے ہیں۔حال ہی میں انہیں سٹار مارکیٹنگ اور بزم یاور مہندی لائف ٹائم اچیومنٹ ایواڈسے بھی نوازا گیا ہے۔AP PAC کی بانی ممبروں سے میں سے ایک ہیں۔اُنہوں نے ملکہ غزل ٖفریدہ خانم کے ساتھ نیویارک میں ہونے والی بہت بڑے شو کی میزبانی بھی کی ہے۔
عالمی خواتین کے موقع پر انہیں ویمن ٹوویمن فورم کے پلیٹ فارم سے انہیں ایواڈز سے نوازا گیا۔
راحیلہ اس فورم کے پروگراموں میں نہ صرف حصہ لیتی ہیں بلکہ ایگز یکٹو ٹیم کو مدد بھی فراہم کرتی ہیں۔ وہ ویمن ٹوویمن فورم کو خواتین کی نمائندہ تنظیم سمجھتی ہیں اور اس سے جڑے رہ کر عورتوں کو معاشرے کا مضبوظ اور فعال بنانا چاہتی ہیں۔
اس فورم کی بانی نصرت سہیل کا کہنا ہے کہ میں اپنی خوش قسمتی سمجھتی ہوں کہ ویمن ٹوویمن فورم میں راحیلہ فردوس جیسی قابل اور نامور شخصیت شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں