کوروناوائرس کی وجہ سے شاپنگ اب مشکل نہیں

کوروناوائرس کی وجہ سے شاپنگ اب مشکل نہیں

ان دنوں، کورونا وائرس پھیلنے سے روزمرہ کی زندگی کی تمام سرگرمیاں ختم ہوچکی ہیں۔ اس وائرس کی وجہ سے تمام روایتی اور آن لائن کاروبار اور خریداری بھی محدود کردی ہے۔ حکومت کی طرف سے نافذ لاک ڈاؤن کی وجہ سے پاکستان جیسے ترقی پذیر ممالک بھی اس بحران کا شکار ہیں۔
اس وائرس کی وجہ سے پاکستان میں لوگوں کو بہت پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ مکمل طور پر لاک ڈاؤن کے باعث تقریباتمام ضروری اشیاء ان کی دسترس سے باہر ہیں۔

کوروناوائرس کی وجہ سے شاپنگ اب مشکل نہیں

اس قسم کے وبائی مرض میں، ہر ایک کے لئے آن لائن شاپنگ ایک بہترین انتخاب ہے جو معاشرتی فاصلے پر عمل کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔ تاہم، کچھ وجوہات کی وجہ سے، بدقسمتی سے، لوگوں کو اب بھی آن لائن شاپنگ میں چیلنجز کا سامنا ہے۔
سخت اوقات، سخت اقدامات
سب سے بڑا چیلنج یہ ہے کہ بیشتر مشہور آن لائن شاپنگ اسٹور بند ہیں۔ کچھ اسٹور اپنی چیزوں کو زیادہ قیمت دے کر اس وبائی امراض کا فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ لوگ الجھن میں ہیں کہ کیا خریدنا ہے اور کہاں سے ہے۔
اس بڑے پریشانی سے نمٹنے کے لئے، جی آئی کے انسٹی ٹیوٹ کے گریجویٹس، محمد بلال جمیل اور سید علی عباس حیدر نے ایک بہتر حل نکالا ہے۔ انہوں نے پاکستان [شاپنگم ڈاٹ کام] میں پہلی مرتبہ ویب سائٹ بنائی ہے جو آپ کے مطلوبہ پروڈکٹ کو پاکستان کے تمام آن لائن اسٹوروں میں ٹریک کرے گی۔ وہ لوگ جو بحران کی اس صورتحال میں الجھے ہوئے ہیں وہ آن لائن خریداری کا اپنا مسئلہ حل کرسکتے ہیں اور وقت کے ساتھ اپنی خواہش کی مصنوعات تک پہنچ سکتے ہیں۔
ویب سائٹ، شاپنگم ڈاٹ کام کے بانیوں کا دعوی ہے کہ انہوں نے آپ کی لاکھوں مصنوعات کو زندہ رکھنے کے لئے پیچیدہ مشین لرننگ الگوس اور ایڈوانس ڈیٹا کان کنی کی تکنیک کا استعمال کیا ہے۔ لوگوں کو ایک ہی جگہ پر سب کچھ مل جائے گا۔
نہ صرف ٹریکنگ، بلکہ یہ ویب سائٹ ان تمام آن لائن اسٹوروں کی درجہ بندی کرنے کی بھی اہلیت رکھتی ہے جو اس وبائی صورتحال میں آن لائن شاپنگ کے لئے ابھی بھی کھلے ہوئے ہیں۔ اس خصوصیت سے اس سائٹ سے آن لائن خریداری کرنے کے خواہشمند ہر فرد کو قریب ترین آن لائن اسٹور کا پتہ لگانے میں مدد ملے گی۔ ان کے لئے جلد سے جلد مصنوعات کو وصول کرنا زیادہ آرام دہ اور آسان ہوگا۔
کس طرح براہ راست ٹریکنگ عملی طور پر کام کرتی ہے؟
جب بھی کوئی صارف اس ویب سائٹ پر سرچ بار کھولتا ہے اور اس ویب سائٹ پر اپنی خواہش کی چیزوں کی تلاش کرتا ہے، ایک پیچیدہ سرچ الگو پاکستان میں لگ بھگ تمام آن لائن شاپنگ اسٹورز سے مصنوعات کی بازیافت کے لئے ایک آپریشن مرتب کرتا ہے۔ اس سے ان تمام آن لائن شاپنگ اسٹوروں کی درجہ بندی کرنے میں مدد ملے گی جو فراہمی کی خدمات پیش کررہے ہیں اور جو لاک ڈاؤن کے دوران نہیں ہیں۔ نیز، اس اسٹور کا صحیح مقام بھی دکھاتا ہے تاکہ سبھی تیز تر ترسیل کے آپشن کے لئے جاسکے اور اندازہ لگائیں کہ کیا ہوگا؟
صرف ایک سیکنڈ میں مکمل طریقہ کار
اس ویب سائٹ شاپنگ ڈاٹ کام کے موجودہ اعدادوشمار کی طرح، اس میں 210 آن لائن اسٹورز ہیں جن میں تقریبا 3.2 ملین مصنوعات ہیں اور صارفین کے تمام سوالات ان کے متعلقہ نتائج کے ساتھ براہ راست اپ ڈیٹ ہوجاتے ہیں۔ اس سے نہ صرف اپنے صارفین کو وقت کی بچت میں مدد ملتی ہے۔ ان کے مطلوبہ نتائج کا پتہ لگانے میں بھی مدد کرتا ہے بلکہ شپمنٹ کے بارے میں پیشگی معلومات کے ساتھ ان کی تازہ کاری بھی کرتا ہے۔ کوروناوائرس پھیلنے کی اس وبائی صورتحال میں یہ بہت مددگار اور زندگی بچانے والا ہے۔
ویب سائٹ میں قیمت کے مقابلے کی خصوصیت بھی موجود ہے۔ اس سے نہ صرف قریب ترین اسٹورز بلکہ سب سے سستی منصوعا ت کا پتہ لگانے میں بھی مدد ملتی ہے۔ یہ خصوصیت اپنے صارفین کو غلط معلومات، ناقص سودے، اور زائد قیمتوں پر آمادہ کرنے کے لئے ڈھال کا کام کرتی ہے۔
سماجی طور پر ذمہ دار ہونے کے علاوہ، شاپنگم کو حکومت پاکستان کی سرکاری ویب سائٹ کے ساتھ بھی ہم آہنگ کیا گیا ہے۔ یہ، کورونا وائرس کی تازہ کاریوں کے لئے۔ ویب سائٹ ہر صفحے پر مقدمات کی تازہ ترین تعداد دکھاتی ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: محمد اسد خان انسٹی ٹیوٹ کے سٹوڈنٹ کا بڑا کارنامہ

لہذا، بحران اور لاک ڈاؤن کی اس صورتحال میں، اگر آپ آن لائن خریداری کے بارے میں سوچ رہے ہیں تو، فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ ایک بار شاپنگم آزمائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں