کوروناکہاں پید ا ہوا

کوروناکہاں پید ا ہوا

یہ کوروناوائرس ایک ایسی پیداوار ہے کہ جس کی ماں کا تعلق شاید کسی نہایت کا آوارہ خاندان سے ہے کبھی کہیں تو کبھی کہیں، کبھی ان کے در تو کبھی در بہ در مگر یہ بات سمجھ سے باہر ہے کہ آخر کوروناکہاں پیدا ہوا۔
آج کل ہر دل مسلم کے د ل میں یہ بات جنم لے رہی ہے کہ اگر یہ اللہ کا عذاب ہے تو مسلمان پر کبھی عذاب نہیں آسکتا عذاب تو کافروں پر آتا ہے۔ اگر آپ کو یاد ہو تو سمسن کارٹون میں بہت عر صہ پہلے ایک وائرس سے متعلق ویڈیو دیکھائی تھی کہ کس طر ح سے یہ وائرس بھیجا گیا اور کسطرح سے یہ پھلتا گیا اور لوگ آہستہ آہستہ مرتے گئے ہماری سمجھ میں یہ صر ف کارٹون ہی تھے مگر اصل کچھ اسی طر ح کی ہے۔

کوروناکہاں پید ا ہوا

یہ کہا نی شروع ہوتی ہے اسرائیل میں دیوار گریہ سے لگ کر رونے والے اُن یہودیوں سے جن کے بڑے بزرگ اب کہتے ہیں کہ ہمارا مسیح آنے والا ہے۔
دراصل یہ مسیح کوئی اور نہیں بلکہ ایک آنکھ والا دجال ہے جس کے بہت سے پیروکار ہیں جن میں فری میسن، ایلومیناٹی اور سکلز اینڈ بانڈ جیسی تنظمیں شامل ہیں۔ جو اپنے آقا دجال کی آمد میں تیاریوں میں مگن ہے اور ایک نیو ورلڈ آرڈر لانے کی کوششوں میں شامل ہیں اور کوروناوائرس جیسی مہلک بیماریاں اس دنیا میں متعارف کر وا رہا ہے۔ یہ کوروناوائرس قدرتی نہیں بلکہ لیبارٹری میں اور یہ بر طاینہ میں تیار ہوا اور امر یکہ میں رجسڑڈ ہوا۔
اس وائرس کے آنے اک مطلب کہ کیمیکل ہتھیار کے طور پر بہت سازش کی تیاری ہے۔ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو کے ذریعے یہ بات سامنے آئی کہ 2006میں امریکہ کی ایک کمپنی نے حکومت سے اس کا پیٹنٹ یا عام زبان میں منظوری بھی کہا جا تا ہے لی اور پھر 2014یہ ظاہر کر نے کے لئے کہ یہ وائرس کسی ایک جگہ تیا ر نہیں ہوا تو اس کی ویکسیسن کی پیٹنٹ ڈالی گی لیکن نومبر 2014میں اسے باقاعدہ منظور کیا گیا جس کی ویکسیسن اسرائیل میں تیار ہوں رہی ہے۔
یہ وائرس بر طانیہ کہ لیبارٹری میں تیار کیا گیا جس کی رجسٹریشن امریکہ میں ہوئی پھر اسے ائیر کینیڈا کے ذریعے چین کے شہر وہان بھیجا گیا۔ اب سوال یہ پید ا ہوتاہے کہ آخر یہ چائنا ہی کیوں بھیجا گیا اصل میں امریکہ چین کی تر قی سے گز شتہ کچھ عر صے سے گھبراہٹ کا شکار ہے اور اس کو اس بات کا ڈر ہے کہ اگر چائنا ان سے آگے نکل گیا تو پھر شاید امر یکہ کا نام صر ٖف تاریخ میں ہو گا دنا کے نقشے پر نہیں۔
چین کے ساتھ ساتھ اسرا ئیل اور امریکہ کو پاکستان سے بھی خطرہ ہے کیونکہ اس پاک دھرتی کا وجود شیطانی تنظیموں فری میسن، ایلومیناٹی اور سکلز اینڈ بانڈسے پا ک ہے اور ہمیشہ پاک رہے مگر کچھ شہادتیں ہمارے پیارے نبیﷺ ہمیں چودہ سو سال پہلے ہی دے گئے تھے تو ہم تیار ہیں مگر کیا یہ شیطان کے بچے کلمے حق سے لڑنے کے لئے تیار ہیں۔
چاہے کچھ بھی ہو یہ دھرتی بھی اللہ کی اور اس میں مر ضی بھی اللہ کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں