effects-of-corona-virus-on-technology

کورونا وائرس کے ٹیکنالوجی پر اثرات

کورونا وائرس کے ٹیکنالوجی پر اثرات

دنیا میں کورونا وائرس کے پھیلاو سے ہر ملک، ہر شہر، اور نہ جانے کون کون سی تبدیلیاں پیدا ہورہی ہیں۔بہت سی چھوٹی بڑی کمپنیاں ہیومن قوتوں کو گھروں تک محدود کرنے پر مجبورہوگی ہیں۔آم جن کے بغیر رہنے کا سوچ بھی نہیں سکتے ان سے آپ کو آن لائن ملاقات کرنی پڑتی ہے۔

ایک اہم خبر کے مطابق یورپ میں کورونا وائرس زد میں آنے والے ملک اٹلی میں واٹس ایپ کے استعمال میں بیس فی صد اضافہ ہوا ہے۔ اسی طرح اسکائپ کی زندگی بھی معمول سے بڑھتی جا رہی ہے۔
کئی ممالک میں تعلیمی ادارے بند ہونے کے باعث گوگل کلاس روم کا استعمال بڑھتا جارہا ہے اور اسی طرح کاروباری اور دفتری میٹنگز کے لیے بھی ویڈیوکانفرنس سوفٹ وئیز کو ترجیح دی جارہی ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں:کوروناوائرس ان امریکہ

نقل و حرکت اور مختلف سماجی و تجارتی سرگرمیاں متاثر ہونے سے اسٹاک مارکیٹ مندی کا شکار ہیں تاہم آن لائن پلیٹ فورم کی بڑھتی ہوئی مانگ کی وجہ سے بعض ٹیکنالوجی کمپنیوں کوبہت سا معاشی فوائد حاصل ہورہے ہیں۔
ویڈیو کانفرنسنگ کا سوفٹ ویئر زوم بنانے والی کمپنی کی پانچوں اُنگلیاں گھی میں ہے۔ ویڈیو کانفرنسنگ اور اسٹریمنگ کے لیے اس کے سوفٹ ویئر کے استعمال روز باروزاضافہ ہو رہا ہے۔
کئی ممالک میں آبادی کا بڑا حصہ جو کہ گھروں تک محدود ہونے کی وجہ سے لوگ اپنی انٹر ٹیمنٹ کے لیے آن لائن انٹر ٹیمنٹ سائٹسکا زیادہ استعمال کر رہے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کی وجہ سے یوٹیوب، ہولو اور نیٹ فلکس کو اشتہارات کی مد میں لاکھوں ڈالرز کا منافع حاصل ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

کورونا وائرس کے ٹیکنالوجی پر اثرات” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں