the-prime-minister-opened-the-lockdown-on-low-heat

وزیراعظم نے ہلکی آنچ پر لاک ڈاؤن کھول دیا گیا

وزیراعظم نے ہلکی آنچ پر لاک ڈاؤن کھول دیا گیا

وزیراعظم عمران خان نے لاک ڈاؤن میں دو ہفتوں کی توسیع کا اعلان کر دیا ہے اس لاک ڈاؤن میں ملک بھر کے تعلیمی ادارے بدستور بند رہیں گے جب کہ عوامی مقامات پر بھی لاک ڈاؤن پہلے طر ح کی ہی برقرار رہے گا تاہم بیروزگاری کے خدشے کے پیش نظر کنسٹرکشن سمیت چند صنعتوں کو کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔
وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ میں لاک ڈاؤن سے دیہاڑی دار اور روز کمانے والوں کی پریشانیوں سے ان سے زیادہ پریشان ہوں لوگ بڑی تعداد میں بیروزگاری کی طرف بڑھ رہے اس لیے کنسٹرکشن سمیت کچھ صنعتوں کو کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ تعمیرات کا شعبہ سب سے زیادہ روزگار فراہم کرتا ہے اسی لیےلاک لاک ڈاؤن کے باوجود کھولنے کو فیصلہ کیا جب کہ صوبوںکو اجازت ہے کہ ضرورت کو مد نظر رکھتے ہوئے کچھ صنعتوں کو کھول دیں گے۔
اس موقع پر وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ رمضان المبارک میں اجتماعی عبادات کے حوالے سے کوئی بھی فیصلہ مختلف فرقوں سے تعلق رکھنے والے بڑے علماء سے بات چیت کے بعد کیا جائے گا۔
وزیراعظم عمران نے ذخیرہ اندوزوں کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اسمگلنگ اور ذخیرہ کرنے والوں کیخلاف سخت آرڈیننس لا رہے ہیں جس کےبعد ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔
وزیراعظم عمران خان نے مزید کہا 18 ویں ترمیم کے بعد صوبوں کے پاس اختیارات ہیں کہ وہ وفاق کے بجائے اپنے فیصلے خود کریں تاہم آج کے اجلاس میں شریک وزرائے اعلیٰ نے بھی ان اقدامات سراہا ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں : لاک ڈاؤن کے حوالے سے اسد عمر کا بڑا اعلان

حکومت نے ہنر سے متعلق تجارت اور کاروبار بھی کھولنے کا حکم دے دیا ہے جس کے بعد درزی، پلمبر، الیکٹریشن، مکینک اورحجام کے کاموں پر کوئی کسی قسم کی کوئی پابندی نہیں ہوگی۔ فضائی سفر اور پبلک ٹرانسپورٹ سمیت عوامی اجتماعات، شادی ہالز، سینمازاورعوامی مقامات لاک ڈاؤن کے اثرات ابھی باقی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں