گن اینڈ کنٹری کلب کے فوری آڈٹ سپریم کورٹ کا بڑا حکم جاری

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے گن اینڈ کنٹری کلب کے فوری آڈٹ کا حکم جاری کرد یا۔

سپریم کورٹ کی ہدایت کے مطابق 2 دسمبر 2019 سے 20 جون 2022 کے عر صے تک کا آڈٹ کیا جائے اور کم عر صے میں آڈٹ کے عمل کو مکمل کیا جائے، گن کلب اور سی ڈی اے کے درمیان زمین لیز کے معاملے کا فیصلہ مجازاتھارٹی کرے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ ہمیں گن کلب کی جانب سے اسلحہ کی تفصیلات فراہمی میں تاخیرہق رہی ،موجودہ کمیٹی کی جانب سے آڈٹ بھی نہیں ہق رہا۔

کمیٹی کے ممبر نعیم بخاری نے جواب دیا کہ گزشتہ ادوار میں فیصل سخی بٹ ،دانیال عزیز اور خرم خان کی سیاسی تقرریاں ہوئیں، انٹرنل آڈٹ ہر سال ہوتا ہے ، سی ڈی اے کو کمیٹی 1880 ملین روپے رقم کی ادائیگی باقی ہے ۔

چیف جسٹس کا کہنا ہے کہ 180 کروڑ کی ادائیگی کے حوالے سے متعلقہ اتھارٹی فیصلے کا حق رکھتی ہے ، ہم کچھ نہیں کع سکتے، یہ کلب قومی اثاثہ ہے حکومت جلد از جلد قانون سازی کلب کے انتظامات کو سنبھالے۔

چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس کہا کہ دونوں اطراف الزامات ہیں ، سیکریٹری بین الاصوبائی رابطہ جات جو کہ چیرمین کے کمیٹی بھی ہیں ایک میٹنگ میں چائے کا خرچہ 4لاکھ 16 ہزار، جبکہ سپریم کورٹ کے اجلاس میں ہم کھانا پینے کا انتظام خود کرتے ہیں اورہم نے تو یہ بھی سنا ہے قائد اعظم بھی اجلاس میں چائے بسکٹ نہیں دیتے تھے۔

یاد رہے کہ اس کیس کی سماعت فروری تک ملتوی کردی گئی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں