پی ٹی آئی رہنما سینیٹر اعظم سواتی کو گرفتار کرلیا

اسلام آباد: ایف ای اے راولپنڈی نے پی ٹی آئی رہنما سینٹر اعظم سواتی کو گرفتار کر لیا ہے ۔

ایچ پی ٹائمزکے مطابق پاکستان تحر یک انصاف کے رہنما سینیٹر اعظم خان سواتی کو ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ اسلام آباد نے ان کے فارم ہاؤس پر چھاپہ مار کر گرفتارکیا۔ اعظم سواتی کے خلاف متنازعہ ٹویٹ پر ایف آئی اے سائبر کرائم میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

گر فتاری کے دوران سینیٹر اعظم سواتی نے ایف آئی اے ٹیم سے مکالمے میں کہا کہ ایف آئی اے کے افسر ایاز میرے مجرم ہیں میں اسے یہاں دیکھنا نہیں چاہتا۔

گر فتاری کے موقع پر اعظم سواتی کا کہنا تھا کہ مجسڑیٹ نے وارنٹ دیا میں تقریر ختم کر کے سیدھا گھر آیا میں‌ بھاگ کے کے پی کے نہیں‌ گیا ،، ظلم کے خلاف رول آف لا کے حق میں سڑکوں‌ پر آئے ہیں‌۔

اعظم سواتی کا مزید کہنا ہے کہ میرے خاندان کے ساتھ جو کیا تو اس حوالے سے دنیا سے کہتا ہوں نکلیں۔

اعظم سواتی نے کہا کہ میں پاکستان کی خواتین سے کہتا ہوں میں آپ کی جنگ لڑ رہا ہوں تاکہ پھ اس طرح اس کی فیملی کوخوار نہ کیا جائے اس لیے یہ جنگ برقرار رہے گی ۔ ان کا کہنا ہے کہ میں نے کوئی جرم نہیں کیا، مجھے گرفتار کرکے مجسڑیٹ کے سامنے پیش کرکے اپنی تفتیش مکمل کریں ہر طرح کے حالات کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہوں۔

سینیٹر اعظم سواتی اعظم سواتی اپنا موقف ریکارڈ کرانے کے بعد ایف آئی اے ٹیم کے ساتھ چلے گئے۔

ایف آئی اے کا کہنا تھا کہ اعظم سواتی کی حالیہ گرفتاری ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ اسلام آباد میں درج مقدمے عمل میں لائی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں